بات تیری نہ ترا نام ہے چکر کیا ہے – عبیدؔ اعظم اعظمی – Urdu Poetry by Obaid Azam Azmi

چکر کیا ہے

بات تیری نہ ترا نام ہے چکر کیا ہے
کام کا اب دلِ ناکام ہے چکر کیا ہے

اب تو تکلیف بھی تکلیف نہیں لگتی ہمیں
یہ جو ہر طرح سے آرام ہے چکر کیا ہے

عبیدؔ اعظم اعظمی
humaap.azmi.in

03-12-2017

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *